Hazrat Abu Bakar Siddique (R.A)

 حضرت ابو بکر صدیق

حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالی عنہ مسلمانوں کے خلیفہ اول تھے ۔ آپ کو اول خلیفہ راشد ہونے کا شرف حاصل ہے ۔ آپ کا شمار مکہ کے بہترین باعلم اور امراء افراد میں ہوتا ہے ۔ آپ نے زمانہ جاہلیت میں شراب نہیں پی تھی ۔ آپ کا شمار عشرہ مبشرہ میں ہوتا ہے ۔ آپ کا دور خلافت بہترین دور کہلایا جاتا ہے ۔ 

آپ کا نام عبد الکعبہ تھا اسلام لانے کے بعد نبی پاک نے آپ کا نام عبد اللہ رکھا ۔ عبدالکعبہ نام اس لے رکھا گیا کہ آپ کا کوئ بھی بہن بھائ سلامت نہیں رہتا تھا آپ کے والد نے خانہ کعبہ کے سامنے منت مانی کہ اگر بچہ سلامت رہا تو اسے کعبہ کی خدمت کےلے متعین کریں گے ۔ آپ کی کنیت ابو بکر ہے ۔ یعنی اونٹوں کا باپ ۔ آپ اونٹوں کے حوالے بہت علم رکھتے تھے اونٹوں کا علاج وغیرہ بھی جانتے تھے ۔ اس کے علاوہ ہر کام اول ہونے کی وجہ سے بھی آپ کی کنیت پڑ گئ ابو بکر اولیت والا ۔ 

آپ بعد عام الفیل دوبرس چھ ماہ 573ء کو مکہ میں عثمان ابو قحافہ کے گھر پیدا ہوئے آپ کی والدہ کا نام سلمی ام الخیر تھا ۔ آپ 22 جمادی الاول 13 ہجری 22 اگست 634ء کو اس دنیا سے رخصت ہوئے ۔ 

آپ نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے سسر تھے ۔ آپ کی بیٹی عائشہ کی شادی نبی پاک سے ہوئ تھی ۔ آپ کو یار غار بھی کہا جاتا ہے کیونکہ آپ نے ہجرت مدینہ کے سفر نبی پاک صلعم کے ساتھ رہے اور راستے میں جب نبی اکرم غار ثور میں تشریف لے گئے تو آپ ساتھ تھے اور غار کے سوراخ کے سامنے پاؤں رکھا جہاں سانپ نے آپ کو ڈس لیا اور آپ نے صبر کیا ۔ آپ کا لقب صدیق تھا آپ نے معراج نبوی صلعم کی تصدیق کی تھی اور نبی محتشم صلعم نے آپ کو انعام دیا اور صدیق کہا ۔

آپ نے تمام غزوات میں شرکت کی ۔قدم قدم پر نبی پاک کے ساتھ رہے ۔ جب غزوہ تبوک میں ہتھیار اور مال کی ضرورت پڑی تو آپ اپنے گھر کا سارا سامان لے آئے ۔ پوچھنے پر بتایا کہ گھر میں صرف اللہ اور اللہ کا رسول کا نام ہے ۔ جب نبی پاک صلعم نے تبلیغ کی آپ مردوں میں سے سب سے پہلے ایمان لائے اور اسلام پر اپنا سب کچھ قربان کر دیا ۔ 

آپ کی تین بیویاں تھیں ۔ ام رومان بنت عامر , اسما بنت عمیس, حبیبہ بنت خارجہ۔ آپ کی تین بیٹیاں تھیں ۔ حضرت اسماء , حضرت عائشہ,  حضرت کلثوم ۔ حضرت اسماء وہ بہادر لڑکی تھیں جو رات کے اندھیرے میں جا کر کھانا پہنچاتی تھیں غار ثور میں ۔ اور حضرت عائشہ نبی پاک کی زوجہ تھیں بہت ذہین حسین باکمال سیرت کی مالک تھیں ۔ سب سے زیادہ احادیث آپ سے مروی ہیں ۔ آپ کے بیٹے بھی تین تھے.  عبد الرحمن, عبداللہ بن ابی بکر, اور محمد ۔

آپ نے نبی پاک صلعم کی حیات پاک میں ہی امامت کی ۔ نبی پاک کے وصال مبارک کے بعد آپ خلیفہ مقرر ہوئے اور مسلمانوں کی راہنمائ کی ۔ کئ فتنوں کے خلاف جہاد کیا اور انہیں ختم کیا ۔ 

اللہ آپ کے درجات بلند کرے آمین ۔



Hazrat Abu Bakar Siddique (R.A) Hazrat Abu Bakar Siddique (R.A) Reviewed by Syed Daniyal Jafri on August 20, 2020 Rating: 5

No comments:

Powered by Blogger.