Hazrat Idrees (A.S)

حضرت ادریس علیہ السلام 

حضرت شیث کی اولاد میں سے ہیں اور پانچویں پشت میں سے ہیں ۔ بائبل میں آپ کا نام ضوک ہے ۔ آپ اللہ کے تیسرے نبی ہیں آپ پر کچھ صحائف بھی نازل ہوئے ہیں ۔ جن کی تعداد پر مؤرخین کا اختلاف ہے ۔ آپ حضرت آدم علیہ السلام کے پانچ سو سال پیدا ہوئے اور نبی بنے ۔ آپ نہایت حسین باوقار پر کشش اور اعلی اخلاق کے مالک تھے ۔ آپ کا ذکر قرآن پاک کی دو سورتوں میں آیا ہے ۔ سورۃ النبیاء اور سورۃ مریم ۔ 

سورۃ النبیاء کی آیت مبارکہ 85 میں ارشاد ربانی ہے ۔


اور اسماعیل اور ادریس اور ذوالکفل کو یہ سب صبر کرنے والے تھے ۔


اس آیت سے ثابت ہوتا ہے کہ آپ اخلاق کے اعلی درجے پر فائز تھے اور حق کی تبلیغ نہایت مدبرانہ انداز میں کرتے تھے کیونکہ جب لوگ آپ کی بات نہیں سنتے ہو گے, آپ کو تنگ کرتے ہو گے, ستاتے ہو گے اور آپ ان کی نالائقیوں پر صبر کرتے ہو گے۔ پھر آپ کا ذکر مبارک سورۃ مریم کی آیت نمبر چھپن اور ستاون میں ہے ۔ 


اور کتاب میں ادریس کا ذکر کر, بےشک وہ سچا نبی تھا, اور ہم نے اسے بلند مرتبہ پر پہنچایا ۔

آپ صابر, سچے اور باعلم تھے ۔ 


آپ کے نام ادریس کی وجہ یہ ہے کہ آپ نے لوگوں کو پہلی بار قلم کے ذریعے علم سکھایا, لکھنا پڑھنا سکھایا ۔ آپ کے نام ادریس کے معنی ہیں درس دینے والا 


دنیاوی علوم میں آپ کو سلائ کا ہنر آتا تھا آپ لوگوں کا لباس سلائ کرتے تھے اور اس کی اجرت نہیں لیتے تھے ۔ 


آپ صائم الدہر یعنی روزے دار تھے, کثرت سے روزے رکھتے تھے ۔ کبھی لوٹ مار نہیں کی ۔ آپ کی قوم آپ کے بعد شرک میں مبتلا ہو گئ ۔ اور اللہ نے آپ کی نسل سے ایک نبی بھیجا جن کا نام نوح تھا ۔

Hazrat Idrees (A.S) Hazrat Idrees (A.S) Reviewed by Syed Daniyal Jafri on August 22, 2020 Rating: 5

No comments:

Powered by Blogger.