Interim Government 1946

quiz in Javascript

C Programming Quiz

Test Exams

Question of

Good Try!
You Got out of answers correct!
That's










 عبوری حکومت 1946ء


8 اگست کو کانگریس کے رویہ میں تبدیلی رونما ہوٸ  اور انہوں نے 16مٸی کامنصوبہ قبول کرلیا۔

سیاسی صورتِ حال  نازک ہوگٸ کہ قاٸدِاعظم نے بہادری سے یہ بیان دیا کہ ”  اگر وہ اب مجھے گرفتار کرنا چاہیں تو میں فوراََ تیار ہو جاٶں گا“۔

24 اگست  کو واٸسراۓ نے عبوری حکومت کے قیام کا اعلان کردیا اور قاٸدِ اعظم نے جوابی طور پر ملک کی تقسیم کا مطالبہ کیا۔ لیکن 2 ستمبر کو عبوری حکومت قاٸم ہوگٸ جس میں مسلم لیگ کے نماٸددے شامل نہ تھے۔

مسلم لیگ نے مشاورات کے بعد اپنے مفاد کے بارے میں سوچتے ہوۓ  عبوری حکومت میں شرکت کی لیکن کانگریسی سرپرستی قبول نہ کی۔

نہرو کو کونسل کا ناٸب صدر مقرر کیا گیا لیکن وہ وزیرِ اعظم کے اختیارات چاہتا تھا جس کے لیے مسلم لیگ راضی نہ تھی۔

ولبھ بھاٸ پٹیل نے داخلہ امور اور اطلاعات کے انچارج رکن کی حیثیت سے حکومت کی پروپیگنڈہ مشنری کو اپنی پارٹی کے فاٸدے کے لیے ناجاٸز طر پر استعمال کرنا شروع کردیا۔


مسلم لیگ اورکانگریس کا مل کر کام کرنا نہایت دشوار ہوگیا۔

مسلم لیگ کے ارکان دستور ساز اسمبلی کےاجلاس میں شامل یہ ہوۓ۔

اجلاس میں ایک قرار دادِ مقاصد پیش ہوٸ ,ایک چیٸر مین کا انتخاب عمل میں آیا اور طریقہِ کار کے لیے ایک کمیٹی مقرر ہوٸ ۔

قرار دادِ مقاصد  کی رو سے ہندوستان کو آزاد وفاقی جمہوریہ قرار دیا گیا  اور ایسےاصول پیش کیے جو منصوبہ کی سفارشات کے  منافی تھے۔ کس میں کہا کہ جب تک صوباٸی اور علاقاٸ آٸین نہیں بن جاتے وفاقی سطح پر کوٸ اصول وضع نہیں کیے جاسکتے۔


کانگریس پنجاب میں خضر حیات ٹوانہ  کی مخلوط  وزارت کی حمایت کر رہی تھی۔ جو کہ شہریوں کے لیے مشکلات کا باعث بنی ہوٸ تھی۔

24 جنوری 1947ء  کو مسلم لیگ نیشنل گارڈ کو غیر قانونی  قرار دی گیا اور مسلم لیگ کے بڑے قاٸدین کو گرفتار کرلیا گیا یہ تحریک زور پکڑی اور مختلف شہروں میں ہندو مسلم  فسادات کا سلسلہ شروع ہوگیا۔

سیکڑوں کی تعداد میں  مسلمانوں کا قتل کا گیا املاک لوٹی گیٸں عورتوں کی برحرمتی کی گٸیں۔

Interim Government 1946 Interim Government 1946 Reviewed by Syed Daniyal Jafri on September 04, 2020 Rating: 5

No comments:

Powered by Blogger.